چلاس: ہرپن داس چلاس کی بنجرمتنازعہ اراضی پر ممکنہ سیکشن 9کے نفاظ کے خلاف دیامر ڈیم کے حقیقی متاثرین کا چلاس میں زبردست احتجاجی مظاہرہ|PASSUTIMESاُردُو

011چلاس: بدھ، 21 اکتوبر، 2015ء – پھسو ٹائمز اُردُو(عمر فاروق فاروقی) ہرپن داس چلاس کی بنجرمتنازعہ اراضی پر ممکنہ سیکشن 9کے نفاظ کے خلاف دیامر ڈیم کے حقیقی متاثرین کا چلاس میں زبردست احتجاجی مظاہرہ ۔مظاہرے میں چلاس ٹاون ایریا کے ہزاروں متاثرین ڈیم نے شرکت کی ۔احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سونیوال قبائل کے سپریم کونسل کے رہنما مولانا عبدالباری ،مفتی امیر حمزہ،مولانا جلال الدین،مولانا ابیاض،حاجی عبدالرحمان،قاری عبداللہ جان،مولانا انعام اللہ و دیگر نے کہا کہ دیامر کی ضلعی اور صوبائی حکومت سمت واپڈا کے حکام ایک بار پھر 2010 کے نام نہاد معاہدے کی طرح درپردہ یک طرفہ طور ہرپن داس میں تعمیر شدہ عمارات جو مشترکہ عوامی اراضی ہے کو ایک بار ایک مخصوص قبیلے کو نوازنے جارہے ہیں ،اور مذکورہ آباد اور بنجر اراضی پر حکومت سیکشن 9 کا نفاظ عمل میں لاکر متنازعہ ایریا کا معاوضہ صرف ایک فریق کو دینا چاہتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ دیامر کے حقیقی متاثرین حکومت کو باور کرانا چاہتے ہیں کہ ہرپن داس کی تمام ارضیات سمت2010کے نام نہاد معاہدے کے خلاف عدالت عالیہ گلگت بلتستان میں مقدمہ زیر سماعت ہے ،جس کا حکم امتناع تا سماعت ثانی جاری کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر سیکشن 9 کا اجراء کرکے صرف ایک گروہ کے نام پر ایوارڈمرتب کیا گیا تو حکومت کے اس اقدام کو تاریخی ظلم تصور کیا جائیگا،اور اس ظلمانہ اقدام کے خلاف حقیقی متاثرین قانون ہاتھ میں لینے پر مجبور ہوں گے۔جس کے بعد کسی بھی قسم کی ناخوشگوار واقعات کی تمام تر ذمہ داری حکومت اور واپڈا پر عائد ہوگی۔انہوں نے مزید کہا کہ ہرپن داس میں ڈیم متاثرین کیلئے ماڈل ویلیجز کے مختص اراضی پر پلاٹنگ کا کام جلد مکمل کرکے متاثرین کے حوالے کیا جائے،او ر ہمارے محلہ جات کو الگ پلاٹ الاٹ کیا جائے تاکہ ہم اپنے روایات کے مطابق رہائش پذیر ہوسکیں ۔انہوں نے کہا کہ ہرپن داس چلاس کے مسلہ کو حل کرنے کیلئے ایک وزراتی کمیٹی تشکیل دی گئی تھی ،اور اُس کمیٹی کو ایک ماہ کے اندر رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا گیا تھا لیکن ایک عرصہ گزر جانے کے باوجود بھی کمیشن کی طرف سے عملی پیش رفت نہ ہونا قابل افسوس بات ہے ۔لہذا متاثرین چلاس کا مطالبہ ہے کہ وزراتی کمیٹی زمینی حقائق کو مد نظر رکھتے ہوئے اپنی سفارشات جلد مرتب کرکے پیش کرے ،تاکہ عوام میں پائی جانے والی احساس محرومی کا خاتمہ ہوسکے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s