گلگت: قراقرم انٹرنیشل یو نیورسٹی پر حملہ گلگت بلتستان کے امن پر حملہ ہے، مولانا خلیل احمد قاسمی سمیت گلگت بلتستان بھر میں مزمت|PASSUTIMESاُردُو

12219451_1046544888730730_7073190608273706235_nگلگت: جمعہ، 13 نومبر، 2015ء پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی) قراقرم انٹرنیشل یو نیورسٹی پر حملہ گلگت بلتستان کے امن پر حملہ ہے کہ ہم نے بڑی قربانیوں سے گلگت بلتستان کے اند ر امن قائم کرنے کی کو شش کی ہے اپسے جند بیرونی اشارو ں پر کا م کرنے والو ں کے ہاتھوں خرا ب ہونے نہیں دینگے ۔ ان خیلات کا اظہار خطیب مر کز ی جا مع مسجد گلگت مو لا نا خلیل احمد قا سمی نے جمعہ کے اجتما ع سے خطاب کرتے ہوئے کہا انہوں نے کہا انہوں نے کہا ہے کہ جن دہشتگر دوں نے پرو فیسر شانو از پر حملہ کیا ہے ان شر پسندعناصر کو حکو مت فوری طو رپر گر فتار کر کے دہشتگردی کے دفعہ ATAکے تحت کارروائی کریں تاکہ حا لات مز ید کشدہ نہیں ہو سکے ۔ اور امن و امان بر قر ار رہے۔ انہوں نے کہا کہ یو نیورسٹی واقعے میں ملو ث اصل چہروں کوبے نقاب کر کے حکومت دہشتگر دو ں کو کیفر کردار تک پہنچا ئے تاکہ تعلیمی ادارو ں میں صر ف تعلیم کا حصول ہی مقصد ہو ۔ انہوں نے کہا کہ کامیا بی کیلئے کام کرنے والے ملاز مینکی جان و ما ل کی حفا ظت کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات اٹھائیں ۔ ہم نے ہمیشہ گلگت بلتستان میں امن کیلئے راہیں ہموار کیں ہیں اور کرتے رہینگے۔ اس گنوانے وا قعا ت میں ملو ث افراد پورے علا قے کے دشمن یں جن کو استاد کی قد ر نہیں ہو تی ہے تو علاقے کی فلاح کیلئے وہ کیسے کام کر سکتے ہیں ۔


گلگت (نمائندہ خصوصی)پر و فیسر شاہنواز پر حملہ کرنے و الے کے سا تھ سا تھ ان کے پیچھے ہاتھ رکھنے والے افراد کے خلا ف ATAکے تحت کارروائی کر کے امن دشمنوں کو نشان عبر ت بنا یاجائے تاکہ آ ئند ہ کسی کو بھی حا لات خراب کرنے کی حرات کرنے کی جرات نہیں ہوگی پر و فیسرشاہنو از پر حملہ کرنے والوں میںیو نیورسٹی کے طلبہ سمیت وہاں ے ملازمین بھی شا مل ہیں و ا ئس چا نسلر فو ری طو ر پر ایکشن لیتے ہوئے ملو ث ملازمین کو بر طر ف کر کے انتظامیہ کے حو الے کریں ان خیا لات کا اظہا ر امیر اہلسنت و الجماعت گلگت بلتستان و مر کز ی خطیب گلگت مو لا نا قا ضی نثار احمد نے یو نیورسٹی واقعے کے بعد اپنی ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ ایک استاد پر حملہ کرنے والے پور ے پو رے ملک و قوم کے دشمن ہیں ۔ان دہشتگر دوں کو کیفر کر دار تک پہنچانے کیلئے گلگت بلتستان کے تمام تر کر دار ادا کریں ۔انہو ں نے کہا کہ انتظامیہ کی غفلت کی وجہ سے آ ئے سا ل یونیو رسٹی میں چند شر پسندعنا صر اپنی اجاداری قام کرنا چاہتے ہیں انتظامیہ ان کے خلا ف کارروائی کریں ۔انہوں نے مز ید کہا کہ گز شتہ سال یو نیو رسٹی کے اندر طا لب علمو ں می مشکل میں مو جو دہ دہشتگر دوں کو دی جانے و الی سزاکو ختم کرنے کے بجائے انتظا میہ اپنی رٹ قا ئم کرتی تو آ ج یہ افسو س ناک واقع پیش نہیں آ تا ۔انتظا میہ و ری طو ر پر جز ا،سزا کے قانو ن پر نیک نیتی سے عملد در آ مد کر ائیں ۔


گلگت (نمائندہ خصوصی)قر اقرم یو نیو ر سٹی میں ہونے و الے نا خو شگو ار واقعے کیخلا ف یو نیورسٹی کے طلبہ نے و ا ئس چا نسلر کے آ فس کے سامنے پر امن احتجاجی مظاہرہ کیا۔احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر تے ہوئے PSFگلگت بلتستان کے مر کز ی رہنما ء شہزاد حسین الہا می نے کہا ہے کہ پرو فیسر ڈاکٹر شاہ نو ا ز پر حملہ نہیں بلکہ طلبہ برادری پر حملہ ہے ۔ جسعکی جتنی مذ مت کی جائے کم ہے۔ ایسے افراد جھنوں نے استاد جسے مقد س پیشہ و الے پر و فیسر پرہا تھ اٹھاکر پورے خطے کے عو ام کاسر جھکا دیا ۔یو نیورسٹی انتظامیہ اور حکو مت نے 24گھنٹے کے اندر اندر تحقیقات کر کے شر پسند عنا صر کو گر فتار نہیں کیا گیا تو طلبا ء تنظیوں کے ساتھ ملکر پورے گلگت بلتستان کو جام کر ئینگے ۔ اس و اقع کے بعد یو نیورسٹی انتظامیہ اپنے سیکورٹی سسٹم فکے ذمہ دارافراد کا قبلہ بھی درست کریں۔احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے (ایم ایس ایف جی بی )کے صو با ئی تر جما ن اسلم پر و یز نے کہل یو نیورسٹی واقعہ قا بل مذ مت ہے ساز شی عنا صر گلگت کے امن کوخراب کرنے کیلئے ہمیشہ یو نیورسٹی کاانتخا بات کرتے ہیں مگر ہم سب ملکر جلد ساز شی عنا صر کے نا پاک عنا صرکو خاک میں ملا ئیں گے ۔ حکومت جلد سازشی عنا صر کوبے نقا ب کریں اور ان کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لا ئیں ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے تو صیف حسین ،وقا ص ارسلان ودیگر نے کہا کہ اس قسم کے و اقعات طلبہ کو تقسیم کرنے کی سا ز ش ہے جس کو طلبہ کبھی کامیا ب ہونے نہیں دینگے۔ طلبہ تنظیموں کے نما ئند وں نے یو نیو رسٹی کے طلبہ سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے صفحوں میں اتحاد اور اتفاق کو مزید مظبو ط کریں اور شر پسند عنا صر کی نشاند ہی کریں اور اس معا ملے میں سیکورٹی کے اداروں کے ساتھ مکمل تعاو ن کریں ۔


گلگت ( ایس یو ثاقب ) دس سے بارہ نقا ب پو شوں نے قراقرم انٹر نیشنل یو نیورسٹی میں لیکچرار شاہ نواز اور نجم نا می لیکچرارکو تشدد کا نشانہ بنا یا اور ہسپتال میں ایڈ مٹ کرایا ہے ۔ یو نیورسٹی کے احا طے کے اندر نقاب پو شوں کا جا نا یو نیور سٹی انتظا میہ اور سیکیور ٹی انچارج پر سوالیہ نشان ہے ۔ ایک لیکچرار کو تشدد کا نشانہ بنا کر منظر عام سے تشدد کر نے والے غائب ہو گئے اور یو نیورسٹی انتظا میہ کو کچھ بھی علم نہیں کہ کس نے مارا اور کہا سے آکر مارا۔ اس حوالے سے سیا سی ، سما جی ، مذہبی حلقوں میں سخت تشو یش پا ئی جا رہی ہے اور اس واقعے کے بعد انتظامیہ کے اہلکا ر یونیورسٹی پہنچ گئے اور اس واقعے کی ابتدا ئی رپورٹ متعلقہ تھا نے میں درج کیا گیا ہے ۔ڈا کٹر شاہ نواز کا کہنا ہے کہ میری کسی کے ساتھ کو ئی دشمنی نہیں ہے مجھے معلوم ہی نہیں ہے میری آفس میں نقاب پوس آئے اور مجھے تشدد کا نشانہ بنایا میں اس معا ملے کو قانون کے سپرد کر تا ہوں اور انصاف کا توقع رکھتا ہوں۔


Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s