گلگت: صوبائی حکومت سو دنوں کے ایجنڈے میں نا کامی کے بعد مسائل کا رخ موڑنا چاہتی ہے جو کسی صورت نہیں ہونے دیا جائے گا، عوامی ایکشن کمیٹی|PASSUTIMESاُردُو

عوامی ایکشن کمیٹیگلگت: پیر، 16 نومبر، 2015ء پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی) داریل واقعہ اور جامعہ قراقرم واقعہ ایک سازش ہے۔ گلگت بلتستان کا امن کسی صورت خراب نہیں ہونے دینگے۔ گلگت بلتستان میں امن ایکشن کمیٹی نے قائم کیا تھا اور ایکشن کمیٹی ہی امن کو بر قرار رکھے گی۔ صوبائی حکومت سو دنوں کے ایجنڈے میں نا کامی کے  بعد مسائل کا رخ موڑنا چاہتی ہے جو کسی صورت نہیں ہونے دیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار عوامی ایکشن کمیٹی کے ہنگامی اجلاس میں ممبران نے اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس مولانا عبدالسمیع کے زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ بہت جلد قاضی نثار احمد اور آغا راحت حسین الحسینی سے ملاقات کر کے باقی ماندہ چارٹر آف ڈیمانڈ لوڈ شیڈنگ اور اقتصادی راہداری منصوبے اور اہم قومی ایشوز پر فیصلے کئے جائینگے۔ اجلاس میں داریل آپریشن پر عودم اطمینان کا اظہار کیا گیا جبکہ جامعہ قراقرم واقعہ جی کی امن کو خراب کرنے کی سازش قرار دیا گیا اور حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ حکومت چارٹر آف ڈیمانڈ پر عملدرآمد کرے اور اپنی رٹ قائم کرے بصورت دیگر عوام کا حکومت سے اعتماد اٹھ جائے گا۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s