گلگت شہر کوجدید طرز کا شہر بنانے کیلئے لانگ ٹرم منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔ ترقیاتی منصوبوں میں عوام کی شراکت کو یقینی بنایا جائیگا۔ وزیر اعلٰی|PASSUTIMESاُردُو

0a1532fd-f210-4c02-8c77-829d7249cce9گلگت : جمعرات، 19 نومبر2015ء پھسو ٹائمز اُردُو (ایس یو ثاقب) وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ گلگت شہر کوجدید طرز کا شہر بنانے کیلئے لانگ ٹرم منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔ ترقیاتی منصوبوں میں عوام کی شراکت کو یقینی بنایا جائیگا۔ مناور اور سلطان آباد کو گلگت ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی حدود میں شامل کرنے سے ان علاقوں کی تعمیر و ترقی جدید طرز پر ہوسکے گی۔ گلگت شہر میں تجاوزات کی حوصلہ شکنی کی جائیگی۔ اداروں کے مابین روابط کو بہتر بنایا جائیگا تاکہ تعمیر وترقی کے کاموں میں تیزی لائی جاسکے۔ ماضی میں مختلف اداروں کے مینڈیٹ کا تعین نہ ہونے سے اداروں کی کارکردگی متاثر رہی اس خلا کو دور کر کے اداروں کے مابین ورکنگ ریلیشن شپ بہتر بنائی جائیگی۔ گلگت شہر میں تجاویزات کی وجہ سے عوام کو مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے کسی دباؤ کے بغیر تجاویزات کے خاتمے کیلئے حکمت عملی بنائی جائیگی۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت ڈولپمنٹ اتھارٹی(GDA) کی جانب سے ادارے کے بارے میں بریفنگ کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں آئند ہ تعمیر ہونے عمارتوں میں بلڈنگ کوڈز پر عملدرآمد کرانے کیلئے اقدامات کیے جائینگے تاکہ زلزلے اور دیگر قدرتی آفات میں نقصانات سے بچا جاسکے۔ وزیراعلیٰ نےGDAکے آفیسران کو ہدایت کی ہے کہ سولر سٹریٹ لائٹس فیز2 کے تحت گلگت شہر کے ان علاقوں میں جہاں اب تک سٹریٹ لائٹس نہیں لگائیے گیے ہیں نئے سولر سٹریٹ لائٹس نصب کیے جائیں۔ گلگت شہر کو ایک مثالی شہر بنانے اور خوبصورت بنانے کیلئے شہر کی تزعین و آرائش کی جائیگی اور انفرا سٹریکچر جدید طرز پر بنایا جائیگا۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ گلگت شہر میں جلد سیوریج سسٹم پر کام کا آغاز کیا جائیگا۔ ترقیاتی منصوبوں میں جدید خطوط کو مدنظررکھا جائیگا روایتی طریقوں کی وجہ سے منصوبوں کی بروقت تکمیل میں تاخیر کا سامنا کرنا پڑ تا ہے۔وزیراعلیٰ نے GDAکے آفیسران کو ہدایت کی ہے کہ گلگت شہر کے سیوریج کاPC-1جلد از جلد تیار کرکے منظوری کیلئے متعلقہ فورم میں پیش کیا جائے۔ حکومت اسی سال سیوریج کے منصوبے پر باقاعدہ کا م کا آغاز کرے گی۔ گلگت شہر کو پلاسٹک فری شہر بنانے کیلئے جلد قانون سازی کی جائیگی۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ گلگت شہر میں سیوریج سسٹم مکمل ہونے بعد20کروڈ کے خطیر لاگت سے شاہراہوں کی میٹلنگ کی جائیگی۔ صوبائی حکومت کے پاس ترقیاتی منصوبوں کی مد میں فنڈز موجود ہیں۔ تمام ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جائیگا۔ گلگت شہر خصوصاً دنیور، کنوداس، سکارکوئی اور جوٹیال میں عوام کو درپیش پانی کی قلت کو دور کرنے کیلئے پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ کی بنیاد پر20کروڈ کی لاگت سے نئے منصوبوں کا آغا ز کیا جارہا ہے۔ وزیراعلیٰ نے محکمہGDAکو ہدایت کی ہے کہ دنیور کامعلق پل( لکڑی کا پل) کو سیاحوں اور مقامی افراد کیلئے ایک دلکش اور منفرد پکنک پوائنٹ بنانے اور گلگت کے تمام آرسی سی پلوں کودلکش اورجازب نظر ربنانے کیلئے اقدامات کیے جائیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ گلگت ریور ویو روڈ کو شاہراہ دستور طرز پر بنایا جائیگا ۔ وزیراعلیٰ نے سٹی پارک کو میعاری پارک بنایا جائیگا۔ فیملیز کیلئے سٹی پارک میں الگ حصے کا تعین کرنے اور بچوں کے کھیلنے کیلئے جھولے اور دیگر کھیلوں کے سامان کی تنصیب سمیت کرکٹ، فٹ بال، والی بال ، باسکٹ بال اور دیگر کھیلوں کے میعاری گراؤنڈ اورکورٹس تیار کرنے کیلئے گلگت ڈولپمنٹ اتھارٹی کے متعلقہ آفیسران جلدPC-1 تیار کریں۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ نے کہا کہGDA میں سٹاف کی کمی کو دور کیا جائیگا اور بھر پور وسائل فراہم کیے جائینگے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s