گلگت: گلگت بلتستان کو پانچواں آئینی صوبہ بنانے کی ضرورت وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سے زیادہ خود پاکستان کو ہے لیکن پاکستان گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ نہیں بنا سکتا، کے این ایم |PASSUTIMESاُردُو

12242998_987590751297376_6900871213412130672_n

تصویر نعیم انور سے

اسلام آباد: ہفتہ، 21 نومبر، 2015ء پھسو ٹائمز اُردُو ( شیر نادر شاہی) گلگت بلتستان کو پانچواں آئینی صوبہ بنانے کی ضرورت وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سے زیادہ خود پاکستان کو ہے لیکن پاکستان گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ نہیں بنا سکتا۔ ان خیالات کا اظہار قراقر م نیشنل موومنٹ کے چیئرمین جاوید حسین نے بانگ سحر سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے آل پارٹیز کانفرنس کی طرف سے جاری اعلامیے پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان کے قو م پرستوں نے آل پارٹیز کانفرنس میں پانچویں صوبے کی بھر پور مخالفت کرتے ہوئے اسے عوام کو بے وقوف بنانے کا عمل قرار دیا تھا لیکن حکمران جماعت نے ہماری موقف کو دباتے ہوئے پانچویں صوبے کا اعلامیہ جاری کیا لیکن ہم نے اس اعلامیے پر دستخط بھی نہیں کیا۔ کے این ایم کے چیئرمین نے مزید کہا کہ اب عوام کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا اور گلگت بلتستان متنازعہ خطہ ہے اور اس بات کا اعتراف یونائیٹڈ نیشن میں پاکستان نے خود کیا ہے انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل تک گلگت بلتستان کو کشمیر طرز کا سیٹ اپ دیا جائے اور بنیادی انسانی حقوق دیئے جائے اور یو این او کے قراردادوں کے مطابق رائے شماری کی جائے اور عوام کے خواہشات کے مطابق مسئلے کا حل تلاش کیا جائے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s