چلاس: محکمہ تعمیرات عامہ کے ملازمین نے گلگت کی طرف لانگ مارچ کرنے کی تیاریاں شروع کردیا|PASSUTIMESاُردُو

1456e210-c2ba-4408-8b53-4e71560c6c31چلاس: بدھ، 25 نومبر، 2015ء پھسو ٹائمز اُردُو (عمرفاروق فاروقی) محکمہ تعمیرات عامہ کے عارضی ملازمین کے احتجاج کو دس روز ہوگئے ۔لیکن صوبائی حکومت کی طرف سے کوئی گرین سگنل نہ مل سکا۔دیامر کے ملازمین نے گلگت کی طرف لانگ مارچ کرنے کی تیاریاں شروع کردیا ۔ محکمہ تعمیرات عامہ ضلع دیامر کی تمام دفاتر بدستور بند پڑی ہیں ۔چلاس میں دسویں روز سے جاری احتجاجی مظاہرے میں ضلع بھر سے سینکڑوں ملازمین نے شرکت کی۔ پیپلز پارٹی جمعیت علماء اسلام،تحریک انصاف اور دیگر جماعتوں کا ملازمین کا بھر پور ساتھ دینے کا اعلان ۔چلاس میں جاری دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایمپلائنز یونین محمد ابراہیم جزل سیکرٹری ایمپلائنز یونین دیامر نصیر اللہ،کرامت اللہ،، و دیگر نے کہا کہ ملازمین کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا ہے ،دس دنوں سے دھرنہ دئے بیٹھے ہیں لیکن کہیں سے بھی کوئی شنوائی نہیں ہورہی ہے ،جوکہ ملازمین کے ساتھ ظلم کی انتہا ہے۔انہوں نے کہا کہ محکمہ تعمیرات عامہ کے ملازمین کی مستقلی فیڈرل فنانس سے 9جون کو منظور ہوئی ہے ،لیکن حکومت گلگت بلتستان اور متعلقہ ادارے کے زمہ دار حکام ملازمین کی ویرفیکیشن پر ویرفیکیشن کرکے معاملے کو ٹال رہے ہیں ،جس کی وجہ سے ملازمین کی مستقلی لٹک کر رہ گئی ہے اور ملازمین گزشتہ 5ماہ سے تنخواہوں سے بھی محروم ہیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت گلگت بلتستان محکمہ تعمیرات عامہ کے ملازمین کو جلد مستقل کرکے ریگولر ہیڈ سے تنخواہیں بھی جلد جاری کریں ،تاکہ ملازمین سکھ کا سانس لے سکیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت جلد ہمارے مطالبات منظور کرے ،ملازمین کو بھوک ہڑتال اور لانگ مارچ پر مجبور نہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا دورہ گلگت کے موقع پر ہمارے مسائل کو زیر غور نہیں لایا گیا،جس سے واضع ہوتا ہے کہ ن لیگ کی حکومت ملازمین کو مستقل کرنے کا ارادہ ہی نہیں رکھتی ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s