گلگت: پاکستان پیپلز پارٹی کا 48 واں یوم تاسیس سکیر یڑیٹ میں نہ ہونے پر مقامی ہوٹل میں منایا گیا|PASSUTIMESاُردُو

02گلگت: منگل، یکم دسمبر، 2015ء پھسو ٹائمز اُردُو(ایس ۔یو۔ ثاقب) پاکستان پیپلز پارٹی کا 48 واں یوم تاسیس سکیر یڑیٹ میں نہ ہونے پر مقامی ہوٹل میں منایا گیا ۔ گلگت بلتستان کی سب سے بڑی جماعت کا دعوی کرنے والی پارٹی کے پاس اپنا صوبائی سیکریڑیٹ نہ ہونے پر کارکنان سخت مایوس جبکہ اقرار نے سید مہدی شاہ کے دور میں مکارات لئے تھے ان کی عدم شرکت صرف وہی افراد تھے جو مشرف دور میں پارٹی کے لیے کام کر رہے تھے ۔ یاد رہے یہ پروگرام صوبائی سطح پر نہیں منایا گیا بلکہ پیپلز پارٹی میڈیا سیل کے ذمہ داروں نے اپنے فریے پر اس پروگرام کا انعقات کیا گیا مقررین نے میڈیا سیل کا شکریہ بھی ادا کیا ۔سابق وزیر محمد نصیر خان جذباتی تقریر کرتے ہوئے کہا کہ جن افراد نے مجھ سے مخارات لئے آج وہ منظر عام سے غائب ہیں۔ انجینئر اسما عیل نے کہا کہ جلد ازجلد تنظیمی ڈھانچہ کی تحلیل ہے اس کو مکمل لر لیا جائے تاکہ پارٹی منظم ہوسکے۔ بلدیاتی الیکشن کے لیے تمام کارکنان تیاری کریں ساتھ ہی تمام پارٹی کے کارکنان ہنزہ میں ہونے والے ضمنی انتخابات کے لیے تیاری کریں ۔ منظور حسین بگوروں نے کہا کہ سا بق سو با ئی کیبنٹ کی وجہ سے پا رٹی کا رکنا ن نے کنا رہ کشی اختیار کی ہے ۔ امجد حسین ایدووکیٹ ، میر باز کیتھران، اقبال رسول ، شہزاد حسین الہا می ودیگر نے کہا کہ (نٰ لیگ کی جماعت کر ہشن اور اقر با ء پر وری کے بازار گر م کیئے ہو ئے ہے ان کو یہ کام مہنگا پڑے گا ۔ میرٹ کی دھجیا ں اڑائی جا رہی ہیں ٹھیکوں کو بند بانٹ جا ری ہے انتظا میہ سے اپنے مفادات کے کام لیئے جا رہے ہیں ۔ ابھی تک کو ئی بھی ایساکا نہیں کای ہے جس کے تحت غریب عوام کا فا ئدہ ہو ۔ اقتصا دی را ہداری میں گلگت بلتستان کی نما ئند گی د ی جا ئے گلگت بلتستان کو دیگر صو بوں کی طر ح برابری کے مرا عات دیئے جا ئیں (ن) لیگ کی یکطر فہ کام کو ہر گز بر داشت نہیں کیا جا ئے گا ۔ صو با ئی حکومت پہ بر ستے ہو ئے مزید کہا گیا کہ اب بھی ہم عوامی مینڈیٹ رکھتے ہیں ایسا نہ ہو کی عوامی عدالت لگا نے پہ مجبور ہو نگے میرٹ پہ کام نہ کر نا محکمہ ورکس کے ملازمینکو چھان بین کے نام پہ ہراساں کر نا ان کی مزمت کر تے ہیں حکومت غریب ملا زمین کے ساتھ زیا دتی بند کر دے ایسا نہ ہو کہ صو با ئی حکومت کا جنا زہ نکل جا ئے ۔آخر میں پی پی پی کے چیئر مین بلا ول بھٹو اور آصف علی زرداری پہ اعتماد کا اظہار بھی کیا گیا اور قرار داد بھی پیش کیا گیا جس میں صو با ئی حکومت کے کر پشن کا پوری داستان لکھ دی گئی ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s