کراچی: ششکٹ یوتھ سوسائٹی کے زیراہتمام چائنا پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کا گلگت بلتستان پر اثرات کے عنوان سے سنیمار|PASSUTIMESاُردُو

collageکراچی: جمعہ، 25 دسمبر، 2015ء – پھسو ٹائمز اُردُو ( آصف سید سخی) چائنا پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کا گلگت بلتستان پر اثرات کے عنوان سے سنیمار آج شہر کراچی میں منعقد ہوا جس میں زرائع ابلاغ کے نامی گرامی شخصیات کے علاوہ عسکری اور دیگر شعبوں سے وابستہ مقررین نے خطاب کیا سمینار میں کراچی میں مقیم گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے سٹوڈنٹس سمیت دیگر افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی سمینار  سے خطاب کرتے ہوئے بی بی سی  اور ڈان نیوز کے نمائندہ خصوصی اور مشہور کالم نوس وسعت اللہ خان نے پاک چین راہداری منصوبے میں گلگت بلتستان کے حوالے سے ایک مثال دیتے ہوئے کہا کہ جب دو بڑے خاندان میں شادی ہوتی ہے تو وہاں کے مقامی لوگوں کو بھی مٹھائی ملتی ہے گلگت بلتستان کے لوگوں کو بھی اُمید ہے کہ ان دو ممالک کے درمیان ہونے والے معاہدے سے انہیں بھی فائدہ ملے گا انہوں نے مزید کہا کہ جب بھی دنیا میں سٹرکیں بنتی ہیں  ترقی خود بہ خود ہوتا ہے یہی راستے چھری یعنی چاقو کی ماندد ہوتا ہے کہ وہاں کے لوگ اس سے کسی  کی گردن کاٹینگے یا سبزی اس حوالے سے مزید وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ جب قراقرم ہائی وئے کی تعمیر نہیں ہوئی تھی تو گلگت بلتستان کے لوگوں کا ایک دوسرے سے پیار و محبت تھا اور ایک گھر جیسا ماحول تھا اور جب راستے بنائی گئی تو فرقہ واریت نے وہاں جنم لیا، اس چائنا پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے حوالے سے منعقدہ سمینار سے پاک فوج سے وابستہ کرنل زاہد نے اس منصوبے میں سیکوریٹی کے مسائل اور دیگر معملات کے حوالے سے کہا کہ  سی پیک منصوبے سے گلگت بلتستان  کے  لوگوں کی ثقافت، پرائویسی اور ماحول کو شدید خطرات لاحق ہو سکتا ہے  جس کیلئے باقاعدہ جامعہ حکمت عملی اور بہتر منصوبہ بندی کی اشد ضرورت  ہیں۔ ششکٹ یوتھ سوسائٹی کی جانب سے منعقدہ سمینار میں ایکسپریس نیو  اور سفر ہے شرط  سے وابستہ وقار احمد  کا ویڈیو پیغام سامین و حاضرین کو   دکھایا گیا جو بذات خود پروگرام میں شرکت نہ کر سکے لیکن گلگت بلتستان کے عوام کے نام   بھیجا گیا ویڈیو پیغام منتضمین نے دکھایا گیا، جبکہ سیمنار سے جناب سجاد ،تصور کریم ہنزائی و دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا، چائنا پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے آغاز میں ہنزہ گوجال کے مشہور سپورٹس مین اور سماجی شخصیت مرحوم فضل علی کی ناگہانی وفات کے بعد ان کی خدمات کو سرہا اور پروگرام میں شریک لاواحقین سے تعزیت کا اظہار بھی کیا گیا۔ ششکٹ یوتھ سوسائٹی کی جانب سے منعقدہ سیمنارمیں گلگت بلتستان کے نوجوان گلوکار عرفان علی بہادر نے اپنی خوبصورت آواز سے محفل کو محضوض کیا۔ سمینار کے اخر میں شریک افراد نے اپنے تاثرات میں ششکٹ یوتھ سوسائٹی کے اس مثبت اقدام کو سراہا ور مستقبل میں بھی ایسے پروگرام منعقد کرانے کی ضرورت پر زور دیا۔

Advertisements

One response to “کراچی: ششکٹ یوتھ سوسائٹی کے زیراہتمام چائنا پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کا گلگت بلتستان پر اثرات کے عنوان سے سنیمار|PASSUTIMESاُردُو

  1. A much appreciated drive by Shiskat Students Organization/GISAK to highlight the opportunities and threats attached to the CPEC. Wishat Ullah Khan of BBC lineage was at his element and carried the day. His specialty in explaining the most difficult situations/questions in so simple words was amazing. The quality of questions and the emotional attachment of the students with CPEC were understandable. Yes, the part –II was Irfan’s part that enthralled the audience with his nice selections from Sufic poetry and regional lyrics.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s