چٹورکھنڈ: گلگت بلتستان کے عوام حق حکمرانی اور حق ملکیت سے محرام ہیں ،قومی اداروں میں ہماری نمائندگی نہ ہونے کے باعث ہمارے تقدیر کے فیصلے غیروں کے ہاتھ میں چلے گئے۔ نواز خان ناجی|PASSUTIMESاُردُو

NAJIچٹورکھنڈ: جمعہ، 15 جنوری، 2015ء – پھسو ٹائمز اُردُو (نعیم انور) بیس سال قبل جب میں نے خطہ بے آئین ہے اور وفاق گلگت بلتستان کے وسائل پر قابض ہے اور استحصالی نظام کے خلاف صدائے حق بلند کی اوراپنی قومی تشخص ا ور حقوق کا نعرہ لگایا تو حکومت سمیت اہم سٹیک ہولڈرز نے مجھ پر غداری کا الزام لگایا اور مجھ پر بے شماربے بنیاد مقدمات دائر کر کے جیل کے سلاخوں کے پیچھے ڈالا،بدترین تشدد کا نشانہ بننا ،طرح طرح کی صحبتیں برداشت کیا اور مخالفین نے عوام میں مجھے مشکوک کر کے پیش کرنے کی کوشش کی مگر اب ہر طرح سے حقوق کیلئے آواز بلند کیا جارہا ہے جو میری عظیم تحریک کا نتیجہ ہے ۔نواز ناجی
بی این ایف کے قائد و ممبر قانون سا ز اسمبلی نواز خان ناجی نے کہا ہے کہ آج گلگت بلتستان کے غیور عوام اپنے بنیادی آئینی حقوق اور قومی تشخص کی بحالی کیلئے آواز بلند کر رہے ہیں ،یہی بات میں نے آج سے بیس سال پہلے اُٹھایا تھا اُس وقت عوام میں قومی شعوربیدار نہیں ہوئی تھی ،جہالت اور ناخواندگی کے باعث عوام نے میری حقائق پر مبنی نظریہ پر توجہ نہیں دی اور گندم کی سبسڈی کو اہمیت دی جس کے باعث آج عوام بے شمار مسائل کا شکار ہیں ،گلگت بلتستان کے عوام حق حکمرانی اور حق ملکیت سے محرام ہیں ،قومی اداروں میں ہماری نمائندگی نہ ہونے کے باعث ہمارے تقدیر کے فیصلے غیروں کے ہاتھ میں چلے گئے۔حقوق کی بات کرنے پر غدار کہلائے گئے ،اپنی جوانی قوم کی خدمت اور قوم کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرنے کیلئے وقف کی مگر قوم کے دشمنوں نے ہمیشہ میرے راہ میں رکاوٹیں کھڑی کی اور مجھے دیوار سے لگایا گیا۔ قومی تحریک کو مختلف سازشوں کے زریعے سبوتاژ کرنے کی کو شش کی مگر کم وقت میں میری آواز عالمی سطح تک پہنچی ہے ۔گلگت بلتستان کے دور دراز علاقوں سے عوام قومی معاملات پر آواز اُٹھانے لگے ہیں جو ہماری تحریک کی کا میابی ہے،کسی بھی قوم کو طاقت کے بل بوتے پر دبایا نہیں جا سکتا بلکہ حقوق دیکر ہی خاموش کرایا جا سکتاہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s