ہنزہ: میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 72گھنٹوں سے بڑنے لگی ،سرکاری و غیر سرکاری امورٹھپ ،لوڈشیڈنگ کے خاتمہ کے دعوے دار اسلام آباد میں کہیں ماہ سے موسم انجوائی کررہے ہیں|PASSUTIMESاُردو

hassanabad power house

  حسن آباد ہنزہ ہائی ڈرو پاوراسٹیشن فائل فوٹو۔ تصویرمختار حسین

گلگت جمعہ، 12 فروری، 2016ء پھسو ٹائمز اُردُو ( نمائندہ خصوصی) ہنزہ میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 72گھنٹوں سے بڑنے لگی ،سرکاری و غیر سرکاری امورٹھپ ،لوڈشیڈنگ کے خاتمہ کے دعوے دار اسلام آباد میں کہیں ماہ سے موسم انجوائی کررہے ہیں اور باقی ماندہ جو ہنزہ میں پائے جاتے ہیں ان کے گھروں میں بجلی کی سپیشل لائنیں لگی ہوئی ہے جس سے ان کا گھر 24گھنٹے روشن رہتاہے ۔سکول اور کالجز کھل گئے اور طلبہ و طالبات کے امتحانات بھی سر پر ہیں اور بجلی کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے طلبہ و طالبات سخت پریشان اور ان کی تعلیمی مستقبل خطرے میں پڑ گئی ۔دور جدید کے تقاضوں کو اگر مد نظر رکھا جائے تو ہما جس علاقے میں رہتے ہیں ان کا باقی تمام دنیا سے مقابلہ کرنے کیلئے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ تعلیمی نظام اور طلبہ وطالبات کے ضروریات کو پوا کرنے کی ضرورت ہے کیوں کہ آگے جاکر ان طلبہ و طالبات نے دنیا کا مقابلہ کرنے ہے ۔امیر اور اعلیٰ حکام کے اولاد تو ملک و بیرون ملک کے بڑی بڑی شہروں میں تعلیم حاصل کررہے ہیں جبکہ ان بنیادی مسائل کا شکار صروف اور صرف غریب کا بچہ ہوتاہے ۔دوسری طرف کارخانہ دار بھی ہاتھوں پہ ہاتھ درے منتظر نظر آرہے ہیں کیوں کہ ان کا بھی کام ٹھپ ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s