چلاس: آبادی کے لحاظ سے سب سے بڑا ضلع ہونے کے باوجود دیامر میں قراقرم یونیورسٹی کے کیمپس کا قیام عمل میں نہ لانا ،یہاں کے طلبہ کے ساتھ تعلیم دشمنی کے مترادف ہے|PASSUTIMESاُردُو

Untitledچلاس: ہفتہ، 13 فروری، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (عمر فاروق فاروقی) دیامر میں قراقرم یونیورسٹی کے کیمپس کا قیام عمل میں لایا جائے۔ان خیالات کا اظہار پیپلز سٹوڈنٹس فیڈریشن کے رہنما عبدالواحید،دیامر سٹوڈنٹس فیڈریشن کے رہنما شرافت اللہ، تانگیر قومی اتحاد کے رہنما ظفر اقبال و دیگر نے اپنے ایک مشترکہ پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ آبادی کے لحاظ سے سب سے بڑا ضلع ہونے کے باوجود دیامر میں قراقرم یونیورسٹی کے کیمپس کا قیام عمل میں نہ لانا ،یہاں کے طلبہ کے ساتھ تعلیم دشمنی کے مترادف ہے،گزشتہ سال وزیر اعظم پاکستان نے اپنے دورہ گلگت کے موقع پر دیامر میں یونیورسٹی کیمپس کا اعلان کیا تھا لیکن اُس اعلان پر تاحال کوئی عملدرآمد نہیں ہوا ہے ،جس کی وجہ سے دیامر کے عوام میں بے چینی اور مایوسی پھیل رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ دیامر کے منتخب نمائندوں کی نااہلی کی وجہ سے اسمبلی میں دیامر کے اجتماعی مسائل پرآج تک کوئی آواز نہیں اُٹھایا گیا ہے ،جس کی وجہ سے دیامر روز بروز مسائلستان بنتا جارہا ہے ۔انہوں نے وزیر اعلی گلگت بلتستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نوٹس لیکر دیامر میں جلد یونیورسٹی کیمپس کا قیام عمل میں لاکر کلاسس شروع کیا جائے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s