گلگت: انتہائی اہمیت کے حامل گلگت تا سکردو روڈ منصوبے کے ٹینڈر منسوخی کے خلاف اپوزیشن سمیت دیگر اراکین کا اسمبلی کے چھٹویں اجلاس میں واک آوٹ|PASSUTIMESاُردُو

12745494_1983025935256911_3322457316415165538_n.jpgگلگت: منگل، 23 فروری، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (نعیم انور) گلگت بلتستان قانون سازاسمبلی کے چھٹویں اجلاس کے پہلے روز کاروائی کے آغاز کے ساتھ ہی پیپلزپارٹی کے ممبر اسمبلی عمران ندیم اپنے نشست سے کھڑے ہوئے اور کہنے لگا کہ مسلم لیگ (ن) کی وفاقی حکومت نے بلتستان کے عوام کے ساتھ دشمنی کا ثبوت دیتے ہوئے انتہائی اہمیت کے حامل گلگت تا سکردو روڈ منصوبے کے ٹینڈر کو منسو خ کیا جس سے بلتستان کے عوام میں شدید تشویش پائی جا رہی ہے لہذا ہم وفاقی حکومت کے نامنا سب رویے کے خلاف احتجاجً اسمبلی سے واک آوٹ کرتے ہیں اور ساتھ ہی انہوں نے اپوزیشن کے دیگر ممبران سے بھی واک آوٹ کی درخواست کی ۔جس پر اپوزیشن بینچوں میں بیٹھے ہوئے تمام ممبران نے اسمبلی سے واک آوٹ کر دیا اور ایوان میں صرف حکومتی ارکان باقی رہ گئے ۔سپیکر قانون ساز اسمبلی فدا محمد ناشاد کی ہدایت پر ڈپٹی سپیکر جعفراللہ اور غلام حسین ایڈوکیٹ نے کامیاب مذکرات کے بعد اپوزیشن ممبران اسمبلی کو واپس ایوان میں لے آئے اور اسمبلی کا روائی کا آغاز دس مینٹ کی تاخیر سے ہوا ۔واک آوٹ کر جانے والے ممبران میں اپوزیشن لیڈر حاجی شاہ بیگ،نواز خان ناجی،عمران ندیم ،راجہ جہانزیب ،حاجی رضوان اور کیپٹن شفیع شامل تھے ۔بعد ازاں وزیر اعلیٰ حفیظ حفیظ الرحمن نے اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے عمران ندیم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ سابق حکومت نے اس اسمبلی میں ایک دفعہ بھی گلگت سکردو روڈ کی تعمیر کی بات نہیں کی اور نہ ہی کسی نے اُس وقت اس ایشو پر واک آوٹ کیا تھا ،انہوں نے کہا کہ گلگت سکردو روڈ کی تعمیر مسلم لیگ (ن) کی پارٹی منشور کا حصہ ہے اور ہمیں اس اہم منصوبے کی تعمیر اور تکمیل کا سب سے زیادہ فکر ہے ،اسی لیے وزیر اعظم نے خود اس اہم منصوبے کی منظوری دی ہے اور یہ منصوبہ چھیالیس ارب کا ہے اور یہ منصوبہ وفاقی حکومت کا حصہ ہے ،منصوبہ بڑا ہونے کے باعث کچھ ٹیکنیکل معملات پیش آئی ہیں جس کے باعث تاخیر کا شکار ہے ۔انہوں نے کہا کہ سابق حکومت نے اس اہم منصوبے میں پچاس لاکھ ڈالر اپنا کمیشن مختص کیا تھا اس انکشاف کے بعد حکومت نے اس کی پی سی ون دوبارہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے اور ہم اس اہم منصوبے کے نام پر کسی کو کمیشن کھانے کی اجازت نہیں دینگے اور شفاف طریقے سے روڈ کی تعمیر کیلئے اس کی فزیبلٹی اور پی سی ون مارچ تک تیار کیا جائے گااور بہت جلد روڈ کا ٹینڈر کرا کے کام شروع کراینگے ،انہوں نے کہا کہ اس اہم منصوبے پر واویلا مچانے والے لوگوں نے اپنے دور اقتدار میں اس کی تعمیر کا نہیں سو چا اور اب اس منصوبہ پر سیاست چمکانا چاہتے ہیں مسلم لیگ (ن) کی حکومت اس منصوبے کو پایہ تکیل تک پہنچاکر دم لیگی ،انہوں نے کہا کہ بلتستان کے عوام نے مسلم لیگ پر اعتماد کا اظہار کر کے الیکشن میں چھ نشستیں مسلم لیگ کو دی ہیں ہماری حکومت عوامی خواہشات پر پوری اترے گی کسی کو پریشان ہونے کی کو ئی ضرورت نہیں ۔وزیر اعلیٰ کے خطاب کا جواب دیتے ہوئے عمران ندیم کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کی وفاقی حکومت کو تین سال سے زیادہ کا عرصہ ہوا ،وزیر اعظم نے اپنی تقاریر میں اس روڈ کی فوری تعمیر کا چھ مرتبہ ا علان کیا اور وزیر اعظم نے گلگت آکر گلگت سکردو روڈ کی تعمیر کا افتتاح بھی کیا تھا یہ سب عوام کے ساتھ دھوکہ نہیں تو اور کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر این ایچ اے نے پی سی ون بنانے میں کوئی ہیرا پھیری کی ہے یا کمیشن مختص کیا ہے اور وزیر اعظم سے جھوٹ بولاہے تو وزیر اعظم پاکستان این ایچ اے کے زمہ داروں کے خلاف کاروائی کرے اور عوامی منصوبوں کے نام پر کمیشن بھٹورنے کی کوشش کرنے والے آفسروں کو لٹکا یا جائے مگر اپنی نالائقی سابق حکومت پر نہ ڈالا جائے، تاخیری حربے ناقابل برداشت ہیں ۔سپیکر قانون ساز اسمبلی فدا محمد خان ناشاد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی طرف سے اہم منصوبے کی تعمیر کے حوالے سے یقین دہانی کے بعد ممبران اسمبلی کو تھوڈا ساانتظار کرنا پڑے گا اور ہم اس امید کا اظہار کرتے ہیں کہ حکومت اس منصوبے کے کی تعمیر میں درپیش تمام معمالات کو فوری طور پر حل کر کے اس منصوبے پر ٹینڈر یقینی بنائے گی اس منصوبہ میں تاخیر ہواتو دفاعی مسائل پیدا ہونگے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s