چلاس: دیامر کے خواتین بہت ہنر مند ہیں،اس علاقے کی خواتین کی ہاتھوں کے بنے دستکاری کو عالمی سظح پر انٹرنیٹ کے ذریعے اُجاگر کرنے کی ضرورت، ماروی میمن|PASSUTIMESاُردُو

29887bb9-5463-483e-8fd5-eb40da659d18bd3e09e8-5a97-4284-ac4b-73415f89b585چلاس: بدھ، 24 فروری، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (عمر فاروق فاروقی) بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے چیرپرسن ماروی میمن نے چلاس کا دورہ کیا ۔گرلز ہائی سکول چلاس اور بوائز ہائی سکول چلاس میں خواتین اور عمائدین دیامر سے الگ الگ خطاب میں چیر پرسن بی آئی ایس پی ماروی میمن نے کہا کہ دیامر کے خواتین مجھ سے زیادہ فہم و ادراک رکھتی ہیں مگر مجھ میں اور ان میں صرف تعلیم کا فرق ہے۔ دیامر کے خواتین کسی سے پیچھے نہیں ہیں ،دیامر کے روایات خواتین کی تقدس اور حرمت پر یقین رکھتی ہیں ،جو کہ خوش آئند ہے۔انہوں نے کہا کہ دیامر کے خواتین نے اپنی رواج کو سامنے رکھتے ہوئے اپنی بچیوں کو سکول بھیجا اور یہ ثابت کردیا کہ دیامر کے لوگ لڑکیوں کے تعلیم کے خلاف نہیں ہیں ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے دیگر علاقوں کی نسبت میں دیامر میں کم آتی ہوں لیکن اب میں بار بار آوں گی،اب دیامر کے دروازے میرے لیئے کھلے ہیں ،اور میں اجنبیت محسوس نہیں کررہی۔انہوں نے کہا کہ لوگ کہتے ہیں کہ دیامر نہ جائیں مگر میرا دل یہاں کے لوگوں کے ساتھ دھڑکتا ہے اور میرے نزدیک دیامر خواتین کیلئے نو گونہیں ،بلکہ یہاں کے لوگ خواتین کی بہت عزت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ دیامر کے خواتین بہت ہنر مند ہ،اس علاقے کی خواتین کی ہاتھوں کے بنے دستکاری کو عالمی سظح پر انٹرنیٹ کے ذریعے اُجاگر کرنے کی ضرورت ۔ انہوں نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹس پروگرام کی بدولت سے دیامر میں ۳ہزار بچیاں اور پانچ ہزار بچے تعلیم کے زیور سے اراستہ ہورہے ہیں ۔ انہوں نے چلاس ہائی سکول میں عمائدین دیامر سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دیامر کے مستحق خواتین کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت مستفید کریں گے،اور میرٹ کے بنیاد پر بی آئی ایس پی کو صاف اور شفاف بنائیں گے،اور کسی کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پرو گرام کو صاف اور شفاف بنانے کیلئے عملی اقدمات اُٹھایا گیا ہے، بی آئی ایس پی سروے ٹیم کی غلطی یا بدنیتی کی وجہ سے ڈراپ ہونے والے مستحقین کیلئے سلیف رجسٹریشن ڈیسک قائم کیا گیاہے۔سروے میں رہنے والے مستحقین اپنا نام اندراج کرنے کیلئے سیلف رجسٹریشن ڈیسک سے رجوع کرسکیں گے اس سے بی آئی ایس پی میں مزید کوئی کوتاہی نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ جو مستحقین سروے اور سیلف رجسٹریشن ڈیسک سے بھی رہ جائیں گے تو ان کیلئے ہارٹ لائن نمبر کا سسٹم متعارف کرایا ہے،جس میں رہ جانے والے مستحقین اپنے شناختی کارڈ کا اندراج کرکے اپنا نام انٹر کرواسکتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بی آئی ایس پی سے ن لیگی ورکر مستفید نہیں ہوسکتا ہے کیوں کہ یہ غریبوں کا پروگرام ہے،اور غریبوں کیلئے ہے سیاسی بنیادوں پر بی آئی ایس پی فارم تقسیم نہیں کیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ بی آئی ایس پی میں ماضی کے اندر جو کچھ ہوا سو ہوا ،لیکن اب ن لیگ کی حکومت ہے ،ہم مزید کوتاہیاں برداشت نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سال 2016میں کا سروے بی آئی ایس کے ملازمین سے کروائے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے دور میں اس پروگرام میں بہت زیادہ کوتاہیاں اور زیادتیاں ہوئی اور اپنوں کو نوازا گیا ،لیکن ہم ایسا نہیں کریں گے ہم میرٹ پر غریب لوگوں اور خواتین کو فارم دیں گے،کیوں کہ میں جو کہتی ہوں وہ کرتی ہوں ۔پچھلے دور میں ہونے والی بے ضابطگیوں کا لسٹ بناکر مجھے بھیجا جائے میں تحقیقات کروں گی۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s