ہنزہ: لوکل ٹرانسپورٹروں کی من مانیاں ہنزہ شناکی کے علاقہ خانہ آباد اور مایون گاؤں کے لئے کراے کم نہیں ہوسکے |PASSUTIMESاُردُو

11146236_634404043356807_4812702612865152703_n

شاہراہ قراقرم کا خوبصورت منظر – تصویر آصف شمشالی

ہنزہ: پیر، 14 مارچ، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی)  لوکل ٹرانسپورٹروں کی من مانیاں ہنزہ شناکی کے علاقہ خانہ آباد اور مایون گاؤں کے لئے کراے کم نہیں ہوسکے ،غریب عوام آج بھی 100روپے کے بجائے 150دینے پر مجبور انتظامیہ خاموش تماشائی بن بیٹھی ۔تفصیلات کے مطابق ضلع ہنزہ کے کنجان آباد علاقہ شناکی کے گاؤں خانہ آباد اور مایون کے لئے پٹرولیم مصنوعات کی خاطر خواہ کمی اور انتظامیہ کے بانگ دعواں کے باوجود کرائے کم نہیں ہوسکے لوکل ٹرانسپورٹرز اور ڈرائیور اپنی پرانی روایات کو برقرار رکھتے ہوئے 100روپے کے بجائے 150روپے وصول کررہے ہیں اور غریب عوام مجبوری کی حالت میں دینے پر مجبور ہیں کیوں کہ اس کے علاوہ ان کے پاس کوئی چارہ بھی نہیں ہے اور نہ کوئی اور اپشن ہے ۔واضح رہے ڈائیورزاور ٹرنسپورٹرز اس لئے بھی اپنی من مانیاں کررہے ہیں کیوں کہ یہ علاقہ شاہر ہ قراقرم سے الگ ہے اور لوکل انتظام کی اس علاقہ میں زیادہ اثرورسوخ بھی نہیں ہے ۔عوام نے گورنر گلگت بلتستان اور سابقہ ممبر اسمبلی میر غضنفر علی خان اور ڈی سی ہنزہ سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر ان ڈرائیورز اور ٹرنسپورٹرز کے خلاف کارروائی کرکے عوام کے مسائل حل کرے وگرنہ لوگ احتجاج کی حق محفوظ رکھتے ہیں ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s