چلاس:اقتصادی راہداری کیلئے گلگت بلتستان کے عوام کی 12 ہزار کنال اراضی کو ن لیگ حکومت سرکار کو الاٹ کرکے مفت میں لینا چاہتی ہے ،جو کہ اس خطے کے غریب اور مظلوم عوام کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے، امجدحسین ایڈوکیٹ|PASSUTIMES اُردُو

406bb1f6-df0e-494d-9bfd-007c58ee32b2951841db-7d0d-4b5a-a0b2-f8bf15228dd924754966-e82e-4f8e-ae50-6d2354ae43bcچلاس: اتوار، 20 مارچ، 2016ء – پھسو ٹائمزاُردُو (عمر فاروق فاروقی) پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صوبائی صدرامجد حسین ایڈوکیٹ نے کہا کہ 46بلین ڈالر لاگت سے تعمیر ہونے والا اسی پیک میں پاکستان کے چاروں صوبے بشمول آزاد کشمیر کا بھی حصہ رکھا گیا ہے ،لیکن گلگت بلتستان کو اس عظیم منصوبے کے ثمرات سے محروم رکھا گیا ہے ۔ اقتصادی راہداری منصوبے سے پاکستان تو بدل جائیگا ،لیکن گلگت بلتستان کے عوام کا کیا بنے گا۔اقتصادی راہداری کیلئے گلگت بلتستان کے عوام کی 12 ہزار کنال اراضی کو ن لیگ حکومت سرکار کو الاٹ کرکے مفت میں لینا چاہتی ہے ،جو کہ اس خطے کے غریب اور مظلوم عوام کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کی حکومت تھک داس،مقپون داس،تھلیچی داس اور چلتس داس کی عوامی ملکیتی اراضی الاٹ کرکے مفت میں ہتھیانہ چاہتی ہے ،جس پر کبھی بھی خاموش نہیں رہیں گے،اس وقت صوبائی حکومت نے 6ہزار کنال عوامی ملکیتی اراضی کو الاٹ کرکے عوام پر ٹیکہ لگا دیا ہے ،جو کہ ظلم اور بربریت کی انتہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو اگر اقتصادی راہداری کیلئے اراضی کی ضرورت ہے تو وہ عوام سے معاہدہ کرکے زمینوں کے معاوضہ جات ادا کرکے اراضی حاصل کرے،ورنہ ہم ایک انچ زمین خالصہ سرکار کی شکل میں حکومت کو دینے کیلئے تیار نہیں ہیں ،کیوں کہ پیپلز پارٹی کے دور میں گلگت بلتستان کی زمینوں پر عوامی ملکیت قرار دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے آج تک حکومت کے خلاف کوئی احتجاج نہیں کیا ہے اور حکومت کو ایک سال کا وقت دیتے ہیں کہ وہ عوامی مسائل کو حل کریں اور گلگت بلتستان کے عوام کو بنیادی حقوق دلائیں ،اگر ایک سال تک حکومت کی یہی کارکردگی رہی تو پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کو جام کر دیگی اور ن لیگ کو حکومت کرنے نہیں دیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ ن لیگ گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ نہیں بناسکتی ہے،عوام کو بے وقوف بنانے کیلئے آئینی صوبے کا ڈونگ رچایا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کو جمہوری نظام دیا اور گلگت بلتستان کو ترقی سے دور رکھنے کی ساش کو ناکام بنا دیا ۔پیپلز پارٹی کا گلگت بلتستان کے عوام پر بہت احسانات ہیں ،پیپلز پارٹی نے گلگت بلتستان میں جمہوری نظام لاکر یہاں کے عوام کو بیوروکریسی کے غلامی سے نجات دلایا اور2000میں یہاں کے عوام کو شناخت دیا ،ن لیگ بتائے اُس نے یہاں کی عوام کو کیا دیا ہے ؟گلگت بلتستان کے عوام شہید ذولفقار علی بھٹو کے دئے گئے ثمرات سے آج بھی مستفید ہورہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سوست کسٹم چیک پوسٹ کو کوہستان منتقل کیا جائے اور انکم ٹکس کا فیصلہ فوری واپس لیا جائے۔انہوں نے کہا کہ ن لیگ عوام دشمن جماعت ہے ،ن لیگ کی حکومت نے ملک پاکستان کی جڑیں کھوکھلی کرنیوالے آمر مشرف کو ملک سے باہر جانے دیا ،کہاں ہیں وہ سعد رفیق ،احسن اقبال اور خواجہ جو کہتے تھے کہ مشرف کو ملک سے باہر جانے کی اجازت ملی تو استعفی دیں گے،آج وہ لیگی وزراء استعفی کیوں نہیں دیتے؟۔ صوبائی صدر امجد حسین ایڈوکیٹ نے چلاس میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ دیامر میں پیپلز پارٹی کی ضلعی کابینہ پارٹی کارکنوں کی رائے کے مطابق تشکیل دیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں پیپلز پارٹی کی بنیاد ضلع دیامر میں رکھی گئی تھی،اُس کے بعد دیگر اضلاع تک پھیل گئی ہے ۔دیامر میں پیپلز پارٹی کے کارکن اور زمہ دارآپس کے اختلافات کو پس پشت ڈال دیں انشاء اللہ اگلے الیکشن میں دیامر کے چاروں حلقوں سے پیپلز پارٹی میدان مار لے گی۔اس موقع پر پیپلز پارٹی کے صوبائی نائب صدر بشیر احمد ،اسلم پرویز ،مبین شاہ افضل خان،شیر زادہ طیفور شاہ و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s