گلگت -بلتستان سے 12ہزار کنا ل سیپیک کیلئے صو با ئی حکو مت نے الاٹ کیاہے جب تک علاقے میں ہم زند ہ ہے اور ہمار ے گلے کیوں نہ کٹے ہم خفا ظت کریں گے، امجد ایڈوکیٹ|PASSUTIMESاُردُو

fb12eb68-9e33-403e-821d-67b0881cc627گلگت: پیر، 28 مارچ، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (پ ر) صوبائی صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے کسی بھی ضلع میں پارٹی کی تنظیم بنی تو پورے مشا ورت سے بتائیں گے ۔ پاکستان پیپلز پارٹی پور ے ملک میں عو ام کی حقو ق کی جنگ لڑ رہی ہے ہمار ے قا ئد ین نے عو ام کی حقو ق کیلئے جانو ں کے نذرانہ دئے یہ سوال اس وقت بھی تھا اور یہ سو ا ل آج بھی ہے۔

پیپلز پارٹی جب بھی کوئی بات کرتی ہے عو ام کی حقو ق کی بات کرتی ہے ۔ذوالفقار علی بھٹو کو کمز و ر کرنے کیلئے انتہاء پسندی کو فرو غ دیا اور کر ڑرو ں رو پے خر چ کر کے پھر بھی نا کام رہے ۔ مسلم لیگ (ن)انتہا ء جما ت ہے اور پاکستان میں بھی داعش کے نمائندے ہیں اور گلگت بلتستان میں بھی داعش کی حکومت ہے۔ 2009کے الیکشن میں پاکستان پیپلز پارٹی کے عو ام نے بھاری مینڈ یٹ دیاآج گھر گھر میں بینظیر انکم سپورٹ کے کارڈ ز چلتا ہے تو وہ بھی بی بی شہید کے نام سے آج بھی مل رہاہے ۔ 2015کے الیکشن میں جھو ٹے وعدے کر کے اور ایک سازش کے تحت گلگت بلتستان میں بغیر مینڈ یٹ کا اقتدار میں الیکشن میں پی پی پی کو اس وقت تک شکست نہیں ہواجب تک مذ ہبی کارڈ استعما ل نہیں ہوا اسی طرح پنجا ب اوردیگر علاقوں کے ملاؤ ں کو شا مل کر کے عو ام کو گمراہ کیاگیا ۔لیگی حکمرانوں نے اب عو ام کی حقو ق کی بند ر بانٹ ہو ئی تو لوگو ں کو ہو ش آ یا ۔انہوں نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کسی کی باپ کی جا گیر نہیں سمجھو ہا ایک ایک انچ کی دفاع کریں گے۔ سیکھوں کے دور کی قانو ن جیسے خا لصہ سر کا ر کے تحت عو ام کو ان کی ملکیتی زمین چھیننا چاہتے ہیں ۔انڈیامیں شاملات کاقانو ن ہے اورپاکستان کے پنجاب میں بھی شاملات کا قانون ہے لیکن گلگت بلتستان میں ہم لیگی قانو ن کو نہیں مانتے ہیں ۔ انہوں نے کہا ہے کہ سست کسٹم چیک پوسٹ میں سا لانہ اربوں رو پے پا کستان کے خزانے میں جا تا ہے جبکہ گلگت بلتستان میں پانی ہمارے پہا ڑ ہمار ے بنجر ز مین ہمار ے اور ہمار ے حقو ق کسی کا با پ بھی مفت نہیں لے سکتا ۔گلگت بلتستان سے 12ہزار کنا ل سیپیک کیلئے صو با ئی حکو مت نے الاٹ کیاہے جب تک علاقے میں ہم زند ہ ہے اور ہمار ے گلے کیوں نہ کٹے ہم خفا ظت کریں گے۔ انہوں نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں طا لبان کی حکومت میں کیسے آ دمی کو نما ئند ہ بنا کر بیجا ہے آپ کے نمائند ے میں وہ جر ات نہیں کہ آپ کے حقو ق کی دفاع کریں اور آپ کے حلقے کی زمین ذیادہ متاثر ہو رہے ہیں 46ملین ڈالر کا منصو بہ ایک کارو بار ہے اور اس کارو بار ی پرو جیکٹ کہیں سے بھی گزر تاہے وہا ں کے لو گ امیر ہو نگے ۔ انہوں نے اخر میں ناراض کارکنا اور پارٹی کے جیالے پارٹی میں واپس آنے پر خو ش آ مد ید کیا گیا جن میں سا بق صدر حلقہ 3محبتشاہ اور نذر جما ل م،محتر مہ یا سمین کودو بارہ پارٹی میں شامل ہونے پر ویلکم کیا گیا ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s