گلگت: شاہراہ قراقرم 40 مقامات پر لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے بند ہے اور بعض مقامات پر یہ شاہراہ مکمل طور پر ختم ہوچکی ہے جبکہ اس کو کھولنے میں 10 سے 15 دن لگ سکتے ہیں، ڈاکٹر محمد اقبال|PassuTimesاُردُو

84ac6ea3-3a20-4c25-ae06-6d83e2e6659aگلگت: جمعرات، 7 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (ندیم خان) صوبائی وزیر تعمیرات ڈاکٹر محمد اقبال نے کہا ہے کہ شاہراہ قراقرم 40 مقامات پر لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے بند ہے اور بعض مقامات پر یہ شاہراہ مکمل طور پر ختم ہوچکی ہے جبکہ اس کو کھولنے میں 10 سے 15 دن لگ سکتے ہیں انھوں نے کہا ہے کہ حالیہ بارشوں کی وجہ سے سرکاری اعداد وشمار کے مطابق 14 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔

روڈ کی بندش سے پھنسے سیاح اوردیگر مسافروں کو نکالنے کیلئے ہیلی کاپٹر حاصل کرنے کیلئے کوشیش کی جاری ہے اور C130 سروس بھی شروع کی جائے گی گلگت میں بجلی کے بحالی کے حوالے سے ڈاکٹر محمد اقبال نے کہا کہ 18 نلتر 18 میگاواٹ سے بجلی بحالی میں بھی مذید دن لگ سکتے ہیں کیونکہ نلتر روڈ بھی لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے شدید متاثر ہوا ہے اور جب تک روڈ کی تعمیر مکمل نہیں ہوگی بجلی گھر میں کام مکمل کرنا ناممکن ہے انھوں نے کہا کہ ہم لوگوں کو صحیح صورتحال اگاہ رکھنا چاہتے ہیں انھوں نے مذید کہا کہ حالیہ بارشوں میں جاں بحق افراد کے خاندانوں سے دلی ہمدری اور دکھ کا اظہار کرتے ہیں اور صوبائی حکومت کی جانب سے جاں بحق افراد کے خاندان کو فی کس 5 لاکھ جبکہ جن کے پکے گھر مکمل گرے انھیں 150 لاکھ جن کے کچے گھر گرے انھیں 60 ہزار دیئے جائے گے۔ واضح رہے کہ روڈ کی بند ش سے گلگت بلتستان اشیاء خوردنوش کی شدید قلت پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s