چلاس: بھاری لینڈ سلائیڈنگ اور پتھر گرنے کی وجہ سے روڈ کو مکمل طور پر کھولنے کیلئے مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے

12959336_10204352244485880_1629085472_o

تصویر رحمت کریم سے

چلاس: جمعہ، 08 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (عمر فاروق فاروقی) حالیہ بارشوں سے چلاس میں پھنسے 2چینی اور 24پاکستانی مسافروں کو ایم آئی 17ہیلی کاپٹر کے ذریعے ابیٹ آباد پہنچا دیا گیا،جبکہ سینکڑوں مسافر اس وقت بھی چلاس اور کوہستان میں پھنسے ہوئے ہیں ۔پولیس ذرائع کے مطابق چلاس سے گلگت تک شاہراہ قراقرم کو چھوٹی گاڑیوں کیلئے کھول دیا گیا ہے ۔دیامر کی ضلعی انتظامیہ اور ایف ڈبلیو او حکام شاہراہ قراقرم سے ملبہ ہٹانے میں دن رات کوشاں ہیں ،تاہم بھاری لینڈ سلائیڈنگ اور پتھر گرنے کی وجہ سے روڈ کو مکمل طور پر کھولنے کیلئے مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ادھر تھک بابوسر روڈ بھی لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگیا ہے ،نیاٹ روڈکو تاحال آمدورفت کیلئے نہیں کھول دیا گیا ہے۔تانگیر روڈ کو کھولنے کیلئے ضلعی انتظامیہ کام کررہی ہے ،جبکہ کھنر ویلی کی سڑک کو کھولنے کیلئے کوئی اقدامات تاحال نہیں اُٹھائے گئے ہیں ۔دیامر کے عوامی و سماجی حلقوں اور متاثرین بارش نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت برقت متاثرین کی بحالی کیلئے عملی اقدامات اُٹھائے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s