گلگت: یو ایس ایڈ کی 33 کروڈ کی مالی امداد سے قراقرم انٹر نیشنل یونیورسٹی میں تعمیر ہونے والا ایجوکیشن کمپلیکس میں ناقص مٹریل استمال ہونے کا انکشاف|PassuTimesاُردُو

543103_470160899744493_976019121_n

قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی فائل فوٹو -تصویرگلگت بلتستان روکس فیس بک پیج سے

گلگت: پیر، 11 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمزاُردُو (نعیم انور) یو ایس ایڈ کی 33 کروڈ کی مالی امداد سے قراقرم انٹر نیشنل یونیورسٹی میں تعمیر ہونے والا ایجوکیشن کمپلیکس میں ناقص مٹریل استمال ہونے کا انکشاف، مقامی سائیڈ انجینئرز کی طرف سے ناقص مٹریل کی نشاندہی اور مٹریلز کو مسترد کرنے پر نجی کمپنی نے تین انجینئرز سمیت ایک اکاونٹنٹ کو نوکری سے فارغ کر کے ڈپلومہ ہولڈرز کو تعینات کر دیا ۔
تفصیلات کے مطابق یوایس ایڈ کی طرف سے 33 کروڈ کی خطیر رقم کے خرچے سے کے آئی یو میں تعمیر ہونے والا ایجوکیشن کمپلیکس میں ایک غیر مقامی تعمیراتی کمپنی نے بھاری رقوم بھٹورنے کی لالچ میں غیر معیاری مصنوعات کے استمال کی کوشش کی مگر ایماندار انجینئرز نے 35ٹن سریا اور 9000سی ایف ٹی کریش باجری غیر معیاری قرار دیکر مستردکر دیا جنکی مجموعی مالیت کروڈوں میں بتایا جارہا ہے۔غیر معیاری مصنوعات کو مسترد کرنے پر یو نا ئیڈٹ انجینئرنگ اینڈ کنسٹریکشن کمپنی نے انجینئرز کو انتقامی کاروائی کا نشانہ بناتے ہوئے نوکری سے فارغ کر کے گھر بھیجوا دیا جن کی جگہ مذکورہ کمپنی نے اپنے من پسند ڈپلومہ ہولڈرز کو سائیڈ انجینئرز تعینات کر دیا ہے ۔میڈیا کی ٹیم نے جب اس میگا سیکنڈل کی شفاف تحقیقات کیلئے مذکورہ کمپنی کے مقامی دفتر سے معلومات لینے کی کوشش کی تو دفتر میں موجود زمہ داروں نے موقف دینے سے صاف انکار کر دیا ۔بر طرف انجینئرز نے صوبائی حکومت اور یو ایس ایڈ کے اعلیٰ حکام سے مذکورہ منصوبے میں ہونے والی میگا سیکنڈل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کر دیا ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s