ہنزہ: حالیہ بارشوں کی وجہ سے ضلع ہنزہ کے تمام رابطہ سڑکیں، آبپاشی کے نظام اور دیگر انفراسٹریکچر تباہ ہوگئی ہیں۔ دور دراز علاقے شمشال اور چپورسن روڈ تاحال بند ہے لوگ پیدل چلنے پر مجبور ہیں، عزیز احمد پی ٹی آئی|PassuTimesاُردُو

12039467_1907462466144564_561971451325124848_nہنزہ: ہفتہ، 16 اپریل، 2016ء پھسو ٹائمز اُردُو (پ ر)  تحریک انصاف ضلع ہنزہ کے ڈسٹرکٹ آرگنائزر عزیز احمد نے کہا ہے کہ حالیہ بارشوں کی وجہ سے ضلع ہنزہ کے تمام رابطہ سڑکیں، آبپاشی کے نظام اور دیگر انفراسٹریکچر تباہ ہوگئی ہیں۔ دور دراز علاقے شمشال اور چپورسن روڈ تاحال بند ہے لوگ پیدل چلنے پر مجبور ہیں، علاقے میں غذائی قلت ہے اور صحت و تعلیم کا نظام بھی درہم برہم ہے لیکن ہمارے نمائیندے ابھی تک گلگت اور اسلام آباد میں فوٹو سیشن اور دعوتوں کے مزے اڑارہے ہیں انھیں عوام کی فکر ہے اور نہ ہ ان کے مسائل کے۔ گورنر گلگت بلتستان میر غضنفر علی خان نے کہا ہے کہ علاقے میں کوئی نقصانی نہیں ہوئی ہے میڈیا والے خوامخواہ شور مچارہے ہیں، چپورسن میں بائیس سو بوری گندم اسٹور میں موجود ہے لیکن حقیقت اس کے بلکل برعکس ہے چپورسن ڈپو سٹور میں موجود دس بوری خراب گندم بھی عوام نے اٹھایا ہے اب اسٹور میں چوہوں کے لئے بھی کچھ نہیں، میر صاحب اگر ایک بوری بھی دکھا سکے تو ہم مزید ان کی غلامی کیلئے تیارہیں۔رانی صاحبہ بھی ہنزہ اور گوجال کے متاثرین سے ملنے اور ان کو دلاسہ دینے کے بجائے گلگت اور اوشکھنداس کے بار بار دورے کر رہی ہے۔ علاقے میں خوراک کی شدید قلت ہے، پیٹرول اور ڈیزل بلکل نایاب ہے۔ انھوں نے کہا کہ علاقے میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں انتظامیہ بھی مسائل سے بے خبر ہیں۔ دور درازکے وادیوں سے مریضوں کو پیدل ہسپتالوں میں پہنچارہے ہیں ۔ اگر یہی صورتحال رہی تو عوام سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہونگے۔

Advertisements

چلاس: پاکستان کو چین سے ملانے والی شاہراہ قراقرم کو ہر قسم کی چھوٹی بڑی گاڑیوں کیلئے کھول دیا گیا|Passu Timesاُردُو

1چلاس: ہفتہ، 16 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (عمرفاروق فاروقی) پاکستان کو چین سے ملانے والی شاہراہ قراقرم کو ہر قسم کی چھوٹی بڑی گاڑیوں کیلئے کھول دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق حالیہ بارشوں سے شاہراہ ریشم کوہستان کے مختلف مقامات پر بند ہوچکی تھی ،جس سے گلگت بلتستان کا زمینی رابطہ ملک سے کٹ کر رہ گیا تھا ۔ پاک فوج ،نیشنل ہائی وے اتھارٹی ،چینی انجینئرز ،ایف ڈبلیو حکام ، ضلع کوہستان اور ضلع دیامر کی انتظامیہ اور کوہستان کی عوام کے بھر پور تعاون اور دن رات کی جدو جہد سے 2ہفتے بعد شاہراہ قراقرم کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھول دے کر گلگت بلتستان کا زمینی رابطہ بحال کر دیا گیا۔شاہراہ ریشم کھلتے ہی بشام،داسو ،پٹن اورکوہستان میں پھنسی ہوئی گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ،اور ٹریفک گلگت بلتستان سے راولپنڈی ا ور راولپنڈی سے گلگت بلتستان سے کی جانب رواں دواں ہوگئی ۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی پی او ضلع کوہستان علی رحمت نے کہا کہ پاک فوج ،این ایچ اے اور کوہستان کی عوام کے بہترین تعاون کے بدولت شاہراہ قراقرم کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ شاہراہ قراقرم کو کھولنے کیلئے چینی انجینئرز کی خدمات بھی حاصل کی گئی۔انہوں نے کہا کہ شاہراہ قراقرم سے گلگت بلتستان میں غذائی بحران پیدا ہوگیا اور عوام کو بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ،بحثیت ڈی پی او کوہستان مجھے گلگت بلتستان کے عوام کی مسائل اور مشکلات کا ادراک تھا ،اس لیئے میں نے کے کے ایچ کو کھلوانے میں تمام اداروں کی خدمات حاصل کیا۔چلاس میں ٹرانسپورٹرز اور مسافروں نے پاک فوج کا شکریا ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاک آرمی کے تعاون سے کے کے ایچ بحال ہوا ،اور ہماری مشکلات میں کمی آئی ۔انہوں نے کہا کہ اس ملک کا پاک آرمی کے بغیر خدا حافظ ہے،14دنوں تک مسافر اور ٹرانسپورٹرز کے کے ایچ پر خوار ہوئے ،لیکن کسی نے پوچھا تک نہیں ۔مسافروں نے ٹین کور راول پنڈی ظفر اقبال ملک کا خصوصی شکریا ادا کیا اور کہا کہ ٹین کور کی کوشیشوں سے شاہراہ قراقرم بحال ہوگئی ورنہ باقی اداروں کی نگرانی میں یہ روڈ ایک ماہ تک نہیں کھولتا تھا۔

گلگت: دنیور کے یتیم رہا ئشی بھی بارش اور زلزلے کے زد میں،کوئی بھی امدادی ٹیم نے دورہ نہیں کیا۔|Passu Timesاُردُو

daniorگلگت: جمعہ، 14 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی) دنیور کے یتیم رہا ئشی بھی بارش اور زلزلے کے زدمیں بے گھر ہو گئے ہیں ، شیرخان ،عدنان حسین، زاہد حسین پسران اشرف خان مر حوم جن کا دنیور آستان محلہ میں ایک ہی گھر تھا جو کہ بارش اور زلزلے کی نذر ہو گیا اور مکمل تباہ ہو گیا ہے اب گھر کے افراد کھلے آسمان تلے زند گی گزارنے پہ مجبور ہیں حکومت کی جانب سے اب تک ان یتیم افراد کی داد رسی کے لیئے کچھ بھی نہیں کیا ہے اور انہوں نے حکومت سے اپیل کیا ہے کہ وہ ہمارے مشکلات کو دیکھے اور ہمیں ا س عذاب سے نجات دلانے میں کر دار ادا کر یں اب تک بے یارو مدد گار ہیں کو ئی بھی امدادی ٹیم نے دورہ نہیں کیا اور نہ ہی ھال پو چھا ہے ۔

چپورسن گوجال: چپورسن روڈ انتظامیہ کی طرف سے غفلت اور کام میں سست روی کی وجہ سے عوام کو شدید مسکلات کا سامنا ہے، مریضوں کو پیدل سوست پہنچا رہے ہیں|PassuTimesاُردُو

13009909_1735804646633419_349099494_o

چپورسن گوجال: وادی چپورسن گوجال میں حالیہ بارشوں اور برفباری کے بعد سوست چپورسن روڈ بلاک ہونے کی وجہ سے علاقے کے مکین مریض کے ساتھ پیدل سوست کی جانب سفر کر رہے ہیں- تصویر حیدر علی بدخشانی سے

گوجال: جمعہ، 15 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (حیدر علی بدخشانی) پی ڈبلیو کے ڈرائیورز چپورسن روڑ کام ادھورکرنے کے بعدآگے کام کرنے سے انکار۔ عوام پانچ دنوں سے روڑکی مرمت میں مصروف ہیں۔ اپر گوجال کے والنٹئیرز بھی بحالی کے کام میں شریک ہیں لیکن انتظامیہ کی طرف سے غفلت اور کام میں سست روی کی وجہ سے عوام کو شدید مسکلات کا سامنا ہے ۔ مریضوں کو پیدل سوست پہنچا رہے ہیں علاقے میں غذائی قلت کا سامنا ہے، ادویات اور دیگر ضروریات زندگی میس نہیں۔ ایسے حالات میں کام کرنے والے ڈرائیوروں کی سستی اورانکاری عوام کے ساتھ مذاق ہے۔ عمائدین نے حکومتی نمائیندوں اور انتظامیہ کو ایک بارپھر گزارش کی ہے کہ وہ بحالی کے کام میں بے وجہ تاخیر کا نوٹس لیں اور عوام کو سڑکوں پر آنے پر مجبور نہ کریں۔

12986487_1735804636633420_1014353097_o

چپورسن گوجال: بارش اور برفباری سے تباہ ہونے والے بجلی کو تین دن کے اندر بحال کر دیا گیا۔ تصویر حیدر علی بدخشانی سے

12980766_1735804629966754_500232461_o

چپورسن گوجال: سوست اور وادی چپورسن کے درمیان واحد زمینی رابطہ سڑک برفانی تودہ گرنے کے بعد ملبہ ہٹانے کے بعد کا منظر – تصویر: حیدر علی گوجال سے

شمشال گوجال: حالیہ برفباری کے بعد برفانی تودہ گرنے سے وادی شمشال میں بڑے پیمانے پر تباہی|PassuTimesاُردُو

شمشال گوجال:  جمعرات، 14 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی) حالیہ بارشوں کے بعد برفباری نے ضلع ہنزہ نگر کا دور افتادہ گاؤں وادی شمشال میں بڑے پیمانے پر تمباہی مچادی ہے، وادی شمشال تا پھسو گاؤں شاہراہ قراقرم تک لنک روڈ مختلف مقامات پر صفہ ہستی سے مٹ گئے ہیں جبکہ شمشال کے رضاء کاروں نے اپنی مدد اپ کے تحت شمشال گاؤں سے وین بین تک روڈ کلیئر کردیا ہے , زرائع کا کہنا ہے کہ پھسو گاؤں سے وین بین تک روڈ بحال کرنے میں کئی دن لگ سکتے ہیں جس کی وجہ سے علاقے میں اشیاء خوردنوش کی شدید قلت کا سامنا۔ – زرائع عبداللہ – ڈان نیوز سے

123

گلگت: محکمہ اطلاعات کے مطابق تیرہ دنوں سے مسلسل بلاک شاھراہ قراقرم ھر قسم کے ٹریفک کے لئے کھول دی گئی |PassuTimesاُردُو

بریکنگ نیوز : گلگت: جمعرات، 14 اپریل، پھسو ٹائمز اُردُو (نمائندہ خصوصی) محکمہ اطلاعات کے مطابق
تیرہ دنوں سے مسلسل بلاک شاھراہ قراقرم ھر قسم کے ٹریفک کے لئے کھول دی گئی ۔ محکمہ اطلاعات گلگت بلتستان وزیر اعلی گلگت بلتستان حفیظ الرحمن کا شاھراہ قراقرم کھولنے اور گلگت بلتستان میں شاندار امدادی کارروائیوں پہ پاک فوج اور ایف ڈبلیو آو کو خراج تحسین ۔ محکمہ اطلاعات گلگت بلتستان


گلگت بلتستان میڈیا سیل

گلگت: پریس کلب کی نو منتخب کابینہ کا پہلا اجلاس صدر اقبال عاصی کی صدارت میں پریس کلب میں منعقد ہوا

press club gltگلگت: جمعرات، 14 اپریل، 2016ء – پھسو ٹائمز اُردُو (پ۔ر) گلگت پریس کلب کی نو منتخب کابینہ کا پہلا اجلاس صدر اقبال عاصی کی صدارت میں پریس کلب میں منعقد ہوا اجلاس میں پریس کلب کی نو منتخب کابینہ کی جانب سے سالانہ انتخابات کا مرحلہ بہتر انداز میں مکمل ہونے پرالیکشن کمیٹی کے ارکان اور کلب کے ممبران کا شکریہ ادا کیا گیا ۔اجلاس میں نومنتخب کابینہ کو تہنیتی پیغامات دینے والے سیاسی ، سماجی ، دینی ، حکومتی اور عوامی حلقوں نیزصحافتی تنظیموں اور شخصیات کا بھی شکریہ ادا کیا گیا۔اجلاس میں کلب کی بہتری کے حوالے سے بھی کئی اہم فیصلے کئے گئے اور اس سلسلے میں مختلف کمیٹیوں کا قیام عمل میں لایا گیا۔اجلاس میں متفقہ طور پر تنویراحمد کو گلگت پریس کلب کا کو آرڈینیٹر، شعیب سلطان کو آئی ٹی انچارج اور کرن قاسم کو معاون خصوصی بنانے کا فیصلہ کیا گیا جو نو منتخب کابینہ کا باقاعدہ حصہ ہوں گے ۔صدر پریس کلب نے اس توقع کا اظہار کیا کہ کابینہ کے تمام اراکین پریس کلب اور اس کے ممبران کے ساتھ ہرممکن تعاون کرتے ہوئے ادارے کے وقار کو بلند رکھنے کے لئے اپنی تمام صلاحیتوں کو بروئے کار لانے میں اپنا کردارادا کریں گے۔